ہندوستان

جسٹس سچر کو قیادت کے لیے آمادہ کیا جائے

جسٹس راجندر سچر ملک کی ان چند شخصیتوں میں ہیں جن کا پورا ملک احترام کرتا ہے۔ کانگریس نے ان کے سپرد مسلمانوں کی حالت جاننے کے لیے رپورٹ تیار کرائی تھی۔ لیکن سب کو شکایت ہے کہ کانگریس نے کیا کچھ نہیں اور کانگریس بھی زبان بند کیے بیٹھی ہے۔ جبکہ ہر پارٹی اس کی طرف انگلی اٹھاتی رہی۔ اب سچر صاحب نے ہی تمام غیر بی جے پی پارٹیوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ 2019کا الیکشن مل کر لڑیں اور آر ایس ایس کے ہندو راشٹر کے خواب کو چور چور کردیں ۔

مزید پڑھیں >>

سونو نگم کا ٹوئٹ: ایک نئی بحث کا آغاز 

اذان دن میں پانچ مرتبہ ضرور ہوتی ہے لیکن ایک مرتبہ اذان دینے میں بمشکل دو سے ڈھائی منٹ لگتے ہیں . اس حساب سے دن میں دس سے بارہ منٹ اذان کے لیے لاؤڈ اسپیکر کا استعمال ہوتا ہے. اس سے کئی گنا زیادہ لاؤڈ اسپیکر کا استعمال سیاسی جلسوں ، مندر کے بھجن، شادی وبیاہ اور دیگر فنکشنوں کے موقع پر ہوتا ہے.

مزید پڑھیں >>

اچھی ہے گائے، رکھتی ہے کیا نوک دار سینگ! 

صرف اتر پردیش ہی نہیں بلکہ ملک کی راجدھانی دہلی سے لے کر کیرالہ، کرناٹک، کشمیر، ہماچل پردیش، ہریانہ، مدھیہ پردیش، گجرات اور چھتیس گڑھ تک گؤركشا کے نام پر مختلف معاملے سامنے آئے ہیں . گزشتہ دنوں راجستھان کے الور میں نام نہاد گؤركشكوں کی طرف سے جو واقعہ انجام دیا گیا، وہ انتہائی قابل مذمت ہے. ایک آئینی اور جمہوری ملک کے لئے ایسے واقعات انتہائی مہلک ہیں . حد تو یہ ہے کہ اس واقعہ میں آر ایس ایس کی طلبہ تنظیم اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے ارکان کا نام بھی قصورواروں کی فہرست میں شامل ہیں .

مزید پڑھیں >>

یوگی اور مودی کے مگر مچھ کے آنسو

مسلمانوں کی اس سے بڑی بدقسمتی اور کیا ہوسکتی ہے کہ جو لوگ نہ اپنا گھر بسا سکے اور نہ ہی اپنی بیوی کو پناہ دے سکے وہ مسلمانوں کو حق و انصاف کا سبق پڑھانے چلے ہیں ۔ یوگی اور مودی کو معلوم ہونا چاہئے کہ مسلمان جس عقیدہ و ایمان کے ماننے والے ہیں وہ نہ صرف مسلم سماج کو بہتر بنانے کی قابلیت رکھتا ہے بلکہ ہر سماج کا نجات دہندہ ہے۔ دنیا آج بھی اسی ایمان و عقیدہ پر دوسرے تمام مذاہب سے زیادہ مائل ہے۔

مزید پڑھیں >>

بورڈ کا فیصلہ: تین طلاق ہرحال میں تین ہی مانی  جائیں گی!

آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ ایک ایسا معتمدادارہ تھا کہ سال میں کہیں ایک اجلاس ہوجایا کرتا تھا جس میں اس سال میں پیش آنے والے اہم واقعات پر یا مستقبل میں کسی خطرہ پر غور ہو کر آگے کامنصوبہ بنالیا جاتا تھا اور پھر ایک جلسہ عام کرکے تمام مسلمانوں کو دین اور شریعت پر عمل کرنے کی تلقین کی جاتی تھی۔ اسے مسلمانوں کی بدقسمتی کہا جائیگا کہ اب سال میں صوبوں صوبوں اور شہر شہر بورڈ کے مصروف اور دینی کام کرنے والوں کوسب کام چھوڑ کر جلسے کرنے پڑے رہے ہیں ۔ اس کی وجہ صرف یہ ہے کہ مسلمانوں کا ایک طبقہ جس میں تعلیم یافتہ مردبھی ہیں اور جاہل ، من مانی اور خودرائی کرنے والی فیشن ایبل عورتیں اور لڑکیاں بھی وہ دوسروں کے نقش قدم پر چل پڑی ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

سونونگم کا اظہار خیال اور مسلمانوں کا ردعمل

آج علی الصبح ملک کے نامور گلوکار سونو نگم نے ٹویٹ کرتے ہوئے اذان کے لئے مائیک کے استعمال کو غنڈہ گردی کہتے ہوئے متواتر اپنے خیالات کا اظہار کیا جس کے بعد سے وہ سماجی رابطے کی سائٹس پر گفتگو کو موضوع بنے ہوئے ہیں ،ایک طرف مسلمانوں کی کثیر تعداد مختلف الفاظ سے اپنے غصہ کا اظہار کررہی ہے اور دوسری طرف سیکولر اور غیر مسلم طبقہ ان کی اس "جرات" پر سلام پیش کررہے ہیں اور اپنے اپنے خیالات کا اظہار کررہے ہیں .

مزید پڑھیں >>

گئوکشی کے خلاف منافرت آمیز مہم کو کاؤنٹر کرنے کی حکمت عملی!

اب تک ملک بھر میں گئو رکشا کی آڑ میں تشدد کرکے 9سے زائد بے قصور مسلمانوں کا قتل کیا جا چکا ہے لیکن ’قتل‘ جیسے سنگین جرم کے ان معاملوں میں پولیس انتظامیہ کی جانب سے کسی بھی قصوروار کے خلاف قابل ذکر اور مناسب کارروائی نہیں کی گئی۔ اس طرح کے معاملات میں اکثر دیکھا گیا کہ قانون شکنی کرنے اور وحشت و بربریت کا مظاہرہ کرنے والے ان غیر سماجی عناصر پر پولیس اکثر بیشتر معمولی نوعیت کے دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کرتی ہے جس کی وجہ سے وہ بہت جلدی چھوٹ جاتے ہیں ، یہی وجہ ہے کہ آج تک کئی بے قصور افراد کی جانیں ضائع ہونے کے باجود کسی کو معمولی سزا بھی نہیں ہوئی۔ یہ حقائق اس بات کو ثابت کرنے کے لیے کافی ہیں کہ متعدد انتہا پسند لیڈاران اور پولیس انتظامیہ سمیت گئو رکشا کی چادر اوڑھے ان جرائم پیشہ افراد کی پشت پناہی اعلیٰ سطح سے اور بڑے پیمانے پر ہورہی ہے۔

مزید پڑھیں >>

مغربی بنگال میں بھگوا بریگیڈ کے بڑھتے ہوئے قدم

بھاجپا اور آر ایس ایس نے پورے ملک میں جو خلفشار اور خون خرابہ کر رکھا ہے اس سے مغربی بنگال کو ہر حال میں بچانے کی کوشش کرنی ہوگی۔ مغربی بنگال کے مسلمانوں کا سیاسی شعور بھی بیدار کرنے کی ضرورت ہے۔ میرے خیال سے یہاں کے مسلمان اپوزیشن اور جمہوریت کی قدر و قیمت سمجھنے سے قاصر ہیں ۔ انھیں ان دونوں کی ضرورتوں کی طرف توجہ دلانے کی اشد ضرورت ہے تاکہ وہ فرقہ پرستوں کے خلاف دلجمعی سے لڑسکیں ۔

مزید پڑھیں >>

حکومت گائے کے متعلق واضح پالسی بنائے

گؤ رکشا کے نام پر ایک اور انسانی بلی چڑھا دی گئی ۔ دادری میں جو کچھ ہوا تھا اس میں گوشت کی موجودگی کا بہانہ تھا ،لیکن یہاں ایسا کچھ بھی نہیں تھا ۔جو شخص گائیں لے جارہا تھا وہ پیشے سے قصائی نہیں تھا ،بلکہ دودھ کا کاروباری تھا اور اسی مقصد سے وہ گائے خرید لایا تھا ۔خبروں کے مطابق اس کے پاس اس خریداری کے کاغذات بھی تھے ۔لیکن گؤ رکشکوں نے اس کی ایک نہ سنی اسے اور اس کے ساتھیوں کو مار پیٹ شروع کردی اور اس مظلوم کو تو اتنا مارا کہ اس کی موت واقع ہو گئی ۔

مزید پڑھیں >>

فرعون کے مکان میں موسیٰ ؑکی پرورش

سدرشن چینل کے با رے میں نہ جانے کتنے لوگوں نے کہا کہ وہ ہر دن فساد کرانا چاہتا ہے۔ لیکن اکھلیش کی حکومت کی جو پوزیشن سب کے اوپر تھی وہی کہ کام بولتا ہے کے اشتہار اور دوسرے اشتہار اس کو بھی برابر دے رہے تھے، لیکن جس وزیر ا علیٰ کے بارے میں یہ خیال تھا کہ اب تو مسلمانوں کے اخبار فریاد بھی کریں گے تو وہ بھی/A 153ہوجائے گی، لیکن جو ہوا اور وزیر اعلیٰ نے جو کردیا اس پر راقم سطور حفیظ نعمانی سے زیادہ خوش ہونے، جشن منانے، یوگی مہاراج کو مبارک دینے اور ان کا شکریہ ادا کرنے کا کسی کو حق نہیں ہے اور میرے پاس وہ الفاظ نہیں ہیں جو شکریہ کے لیے میرے جذبات کی ترجما نی کرسکیں ۔

مزید پڑھیں >>