مذہبی مضامین

یہ بھی ایذا رسانی ہے!

بلاشبہ یہ بھی ایک دینی تقاضا ہے کہ آپ ﷺکے پیغام کواور آپﷺ کے مقصدِ بعثت کو دنیاتک پہونچا یا جا ئے اور مختلف جلسوں اور اجتماعات کے ذریعہ اس کو عام کیا جائے لیکن اس کے لئے طریقہ بھی وہی ہو نا ضروری ہے جس سے آپﷺکی تعلیمات پر کسی قسم کی بھی زد نہ پڑے اور ہمارے کام غیر وں کو اسلام سے بد ظن کرنے سبب نہ ہو۔ اس کے لئے مناسب ہے کہ مساجد میں یا پھر وسیع ہالوں میں اس کا انتظام کیاجائے اس میں ایک پہلو یہ بھی ہوگا اس سے ہمارے سیرت کے جلسوں کی بے توقیری بھی نہیں ہوگی، اور موضوع کی شان کا پاس و لحاظ بھی ہوگا۔     

مزید پڑھیں >>

باہمی تعلقات کی اصلاح: قرآن کی روشنی میں

ضرورت اس بات کی تعلقات اور رشتہ داریوں کی اہمیت کو سمجھیں، اللہ کا ڈر خوف اپنے اندر پیدا کریں، ورنہ وہ دن دور نہیں اگر تعلقات اور رشتہ داریوں کی بے احترامی اور بے ادبی کی یہی صورتحال رہی تو وہ دن دور نہیں ہمارا یہ مشرقی معاشرہ مغرب کی طرح وصفِ انسانیت سے عاری ہو کر مشینوں کے مانند ہوجائے کہ ضرورت کہ حد تک استعمال کیا جائے پھر اسے بند کرکے رکھ دیا جائے، مغرب میں انسان ایک مشین بن کر رہ گیا ہے، نہ کنبہ ہے نہ برادری۔

مزید پڑھیں >>

مکی ومدنی دور کا پیغام امت ِمسلمہ کے نام

بعثت ِمحمدی ﷺ کے بعد اسلام پر دودورگزرے ہیں ، ایک کو’’ مکی دور‘‘ اور دوسرے کو’’مدنی دور‘‘ کہاجاتاہے، دونوں دور مختلف خصوصیتوں کا حامل ہیں اور دونوں دورسے خصوصیت کے ساتھ آج کل کے حالات میں اہلِ اسلام کو مختلف پیغام ملتے ہیں ، ایسے پیغام ، جن کی روشنی میں اہلِ اسلام اپنی پوری تشخصات کے ساتھ دنیاکے کسی بھی کونہ میں پر سکون اورپر وقار زندگی گزارسکتے ہیں۔

مزید پڑھیں >>

اللہ کے رسولؐ کی دعائیں (قسط اول)

عربی زبان میں دعا کا لفظ اور پکار کے معنی میں آتا ہے۔ دعا یدعوا کا مصدر ہے۔ یوں تو دعا اور ندا ہم معنی ہیں ، مگر ندا کبھی بغیر نام لئے بھی یا اور ایا کے ساتھ ہوتی ہے اور دعا میں نام لیا جاتا ہے۔ جیسے فلاں اور کبھی دعا کا استعمال ندا کی جگہ اور ندا کا استعمال دعا کی جگہ بھی ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں >>

طلاق کی شرعی حیثیت

شریعت نے گر چہ طلاق کو آخری حل کے طور پر استعمال کرنے کی اجازت دی ہے ؛ لیکن طلاق دینے کے مختلف درجات اور طریقے متعین کئے ہیں جس طریقۂ طلاق میں بآسانی نکاح کو دوبارہ بحال کیا جاسکتا ہو اور عورت پر سے مرد کا اختیار کم سے کم ختم ہوتا ہو اس کو ’’احسن ‘‘پھر اس سے کم درجے کو ’’حسن ‘‘اور اس کے بعد والے درجے کو’’ طلاقِ بائن ‘‘یا بدعی کہا جاتا ہے۔

مزید پڑھیں >>

ربیع الاوّل کا پیغام

ہم سب ربیع الاول کے پیغامِ محمدی کو اپنے سینے سے لگائیں۔ ربیع الاول کے جشن جلوسِ محمدی اور جلسوں کے وقت اپنا محاسبہ کریں، جائزہ لیں کہ ہمارے اندر تعلیماتِ رسول اللہ ﷺ کا عملی حصہ کتنا پایا جاتا ہے۔ اللہ ہم تمام مسلمانوں کو عمل کی توفیقِ رفیق عطا فرمائے۔ آٓمین

مزید پڑھیں >>

عقد نکاح  کا مسنون طریقہ

جائز طریقے سے باہم ملنے کا نام نکاح ہے، اسلام میں اس نکاح کی بڑی اہمیت ہے اسی سے نسل انسانی آگے بڑھی اور بڑھ رہی ہے اوریہ مومن ومسلم کے ایمان کی تکمیل کا باعث ہے۔ اس کا  اہم مقصد عفت وعصمت کی حفاظت ہے۔یہ انسانی زندگی کی اہم ترین ضرورت ہے اور اللہ کی طرف سے اس کے بندوں کے لئے نایاب تحفہ ہے۔ اول وآخر سارے انبیاء نے شادی کی اور اپنی اپنی امت کو شادی کا پیغام دیا تاکہ انسان اپنی عزت وآبرو کی حفاظت کرے اور جائز طریقے سے اپنی خواہشات پوری کرے۔

مزید پڑھیں >>

دہشت گردی

یہ امیج تمام تر روشن خیالی اور سیکولرزم اور ہیومنزم (انسانیت پروری) کے ارتقاء کے باوجود آج مغربی ثقافت کی ذہنی تشکیل کا حصہ بن چکا ہے۔ بالیقین ایسی وجوہات موجود ہیں جنہوں نے اس امیج سے جدید زمانے میں نئے کارنامے انجام دلوائے ہیں۔ لیکن آئیے ہم انسانی زندگی کو نقصان نہ پہنچانے اور تمام بنی نوع انسان کے امن و سکون سے رہنے کے حقوق کا احترام کرنے کے بارے میں اسلامی تعلیمات پر ایک نگاہ ڈالیں۔

مزید پڑھیں >>

موسم سرما اور اسلامی ہدایات

اسلام وہ  کامل ومکمل مذہب جو انسانیت کی تعلیم دیتاہے، اسلام کے بغیر انسانیت نوازی کا کوئی تصور نہیں کیاجاسکتا؛یہی وجہ ہے کہ دین اسلام میں جہاں اپنی ذات سے متعلق حقوق بیان کیے گئے وہیں دوسروں کے حوالے سے عائد ہونے والے فرائض کی نشان دہی بھی کی گئی  ؛لہذا موسم سرما کی مناسبت سے ہم ان فاقہ کش، نیم برہنہ محتاجوں ، فقیروں اور مسکینوں کو ہرگز نہ بھولیں جوکس مپرسی کی وجہ سےسردی کی خنک راتوں میں ٹھٹر کر رہ جاتے ہیں اور گرمی حاصل کرنے کا کوئی سامان نہیں پاتے۔

مزید پڑھیں >>

ایک مسلمان کا مقصدِ زندگی کیا ہو؟

مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ خواب غفلت سے بیدار ہوجائیں ؛ اپنی جسمانی،  علمی و مالی تمامتر صلاحیتوں کو اس عظیم مقصد کی حصولیابی کے لئے استعمال کریں۔ اللہ کی اطاعت کے ذریعہ اس کی رضا حاصل کرنا اور دعوت دین اور  اس راہ کی جد وجہد کے ذریعہ اسلام کو زندہ اور غالب کرنے کی مستقل فکر کرنا، یہی وہ مقاصد ہیں جن کے لئے ایک مسلمان کو جینا و مرنا چاہیے اور باقی تمام مقاصدکو ان عظیم مقاصد کے تابع رکھنا چاہیے۔

مزید پڑھیں >>