براؤزنگ زمرہ

افسانہ

ادھوری خواہش

                کیا۔ جیسے میری آواز صدیوں سے بند ہو یا پھر قوت گویائی ہی نا ہو۔ دوسری طرف سے آواز آرہی تھی اسے…

افسانچہ

ہاں نا امی آپ نے ہی انہیں بہت چھوٹ دے رکھی ہے۔بھلا روز روز اپنے میکے فون پر بات کرنے کی کیا ضرورت ہے۔پیسے کیا پیڑ…

سفید داغ

      سفیدہ اچانک بغیر دوپٹے کے کمرے کا دروازہ کھول کر باہر نکلی۔آج اس کے ہونٹوں پر مسکراہٹ نہیں بلکہ گالیاں تھیں…

کشمکش 

اور سامنے دیوار پر لگی ان دونوں کی دھندلی تصویریں ہوا کی جھوکوں سے اس طرح جھول رہی تھیں جیسے دونوں ملنے کے بے تاب…

قیمتی انڈے

بابا کی حوصلہ بخش باتیں سن کر نانی بڑا متاثر ہوئیں اور مجھ سے کہنے لگیں بیٹا جاوید دیکھ رہے ہو اقبال بابا کو کتنی…

سرد الآؤ

لوگ جلد ہی جائے حادثہ سے ہٹ کر تتر بتر ہوگئے۔ مگر رات بھرجھگیوں کے میدان سے چیخ و پکار کی آوازیں آتی رہیں۔ صبح کے…

تجارت

ارم کی امی ان دونوں کی باتیں سن کر حیران تھیں اور دل ہی دل میں رب کا شکر ادا کر رہی تھیں، انہوں نے ارم اور عامر کو…

تحفہ

۔۔شبو نے فریج میں رکھی ٹھنڈی مٹھائی سے تمام اہل خانہ کا منہ میٹھا کردیا اور سبھوں کے چہرے پہ تبسم کی لکیریں پھیل…

ٹفن

رات کو کھانے کے بعد اس نے بستر لگایا اور غسل خانے میں چلی گئی۔ تھوڑی دیر بعد دیکھتا ہوں کہ وہ میری پسند کے لباس میں…

بودِ تاباں

اسنے زاروقطار روتے ہوئے انکار کردیا۔۔۔ وہ اور سیاہ اعمال نہیں دیکھنا چاہتی تھی اپنے۔۔۔۔۔ وہ پہلے ہی شرم کے اُس مقام…

شب ہجراں

ایک پل کو لگا کہ نصرت فتح علی خان کی آواز نہ ہو کر اسکے قریب سے کوئی سرگوشی سنائی دی ہو۔۔۔ وہ بہک سی گئ اور جب بے…

بیساکھی

آج بھی راجو سامان سے بھری گاڑی شہر کے اس پار لیے جارہا تھا کہ اچانک ایک برق رفتار گاڑی سے راجو حادثہ کا شکار…

دشتِ بے عافیت

سیدہ خالدہ کاقافلہ عصرکے وقت تک حصارشہرمیں داخل ہوکر حاکم بنارس کے مہمان خانے میں ٹھہرچکاتھا۔ شہرکے غربی دروازے ہی…

ہری بول

سارے دن کی تگ ودو کے بعد اسٹیشن پربیٹھی ملی۔ پھٹی پھٹی حیران آنکھوں کی حیرانی بکھیرتی، آتی جاتی گاڑیوں کودیکھ کر…

راج محل

سورج کے لہو میں ڈوبی ہوئی شام آہستہ آہستہ سلگتی ہوئی رات میں ڈھلنے لگی تھی، سہمی سہمی فضاؤں نے چپ چاپ آنکھیں…

بدلتے روپ

بڑھیا کے شوہر کو مرے ۱۵ سال ہوچکے تھے۔ ایک بیٹی تھی جو قسمت سے شہر میں ایک امیر گھرانے میں بیاہ دی گئی تھی اور جس…

ضدی لڑکی

آج  وہ اپنے بچوں کے ساتھ اپنے بھائیوں کے یہاں رہ کر بھی مہینے کے تیسوں دن خون کے آنسوؤں کے ساتھ زندگی کاٹ رہی،…

اُردو

بھاگتے ہوئے وہاں سے نکل کر بہو نے راشد کے بیگ کی تلاشی لی تو واقعی راشد کے بیگ میں وہ ساری منگوائی گئی چیزیں موجود…

بھرم

چند ایک کے سوا یوں تو ہر لڑکی کچھ آزاد پرست خواتین کے اس نعرہ ’’میرا جسم میری مرضی‘‘ کے مطابق زندگی گزار رہی ہے یا…