اردو سرگرمیاں

فکشن کی ترسیل و تفہیم میں سہل اندازی، عبدالصمد کی انفردایت

ریسرچ اسکالرس کی بڑی تعداد کو مخاطب کرتے ہوئے احمد جاوید نے عبدالصمد کے ناولوں کے موضوعات سے بحث کی۔ انھوں نے کہا کہ عبدالصمد کے ناولوں کے کردار ہماری اپنی زندگی کے کردار معلوم ہوتے ہیں ۔ اسی لئے قارئین ان کی تحریروں سے بہت جلد مانوس ہو جاتے ہیں ۔

مزید پڑھیں >>

جشن ریختہ : اردو کا پروگرام مگر اردو جیسا نہیں

جشنِ ریختہ اردو میں ایک پاپولر کلچر کی بنیاد ڈالنے کی کوشش ہے۔ اردو کے ایک پروگرام میں تین دنوں کے دوران بھیڑی ہی بھیڑ نظر آئے تو اسے ہر اعتبار سے کامیاب ہی کہا جائے گا۔ مہاراشٹر میں گذشتہ برسوں میں قومی اردو کونسل کے کتاب میلے میں پچیس تیس ہزار کی بھیڑ اور سڑکوں پر جلوس کی شکل میں موجود ہوتی ہے۔ ریختہ نے دلی کے ایک اتنے بڑے کیمپس میں پروگرام کرکے لوگوں سے کھچا کھچ بھر کر یہ ثابت کیا کہ ہماری دعوت پر ملک کے طول و عرض سے ہزاروں لوگ صرف اور صرف جشن میں شامل ہونے کے لیے اپنے صرفے پر آسکتے ہیں ، اسے خوش آیند کہنا چاہیے۔

مزید پڑھیں >>

علامہ اقبال سہیل

علامہ اقبال احمد خان ’’سہیل‘‘ (1884۔1955) اگرچہ بطور شاعر زیادہ معروف ہیں لیکن حقیقت ہے کہ وہ ایک جامع کمالات شخصیت تھے۔سہیل جتنے بڑے شاعر تھے، ‌اتنے ہی بڑے وہ اسلامی اسکالر، وکیل، سیاستداں، مجاہد آزادی،خطیب اور ماہر تعلیم بھی تھے۔ اگرچہ انہوں نے صرف ایک کتاب ، یعنی "حقیقت ربا" ، کے علاوہ کوئی تصنیف باقاعدہ شائع نہیں کی لیکن ان کی کلیات مختلف عناوین سے شائع ہوتی رہی ہے جسے دوسرے لوگوں نے مرتب کیا۔ان کے کلام کا پہلا مجموعہ محمد حسن کالج جونپور کے ایک خصوصی شمارے کی صورت میں شائع ہوا۔

مزید پڑھیں >>

جشنِ ریختہ!

آخرطارق فتح جیسے بدبودارانسان کواس خوب صورت پروگرام میں کیسے بلاسکتے ہیں (بعدمیں ریختہ نے اس کی صراحت بھی کی)پھرفوراً ہی میرے ذہن میں ایک بات آئی،جسے معروف ادیب مشرف عالم ذوقی سمیت کئی لوگوں نے کہااورلکھاہے کہ اسے باقاعدہ بھیجاگیاتھااوروہ یاپردے کے پیچھے چھپے ہوئے اس کے آقایانِ ولیِ نعمت یہ چاہتے تھے کہ وہ اس جشن میں جائے

مزید پڑھیں >>

ادبستان کی افسانوی نشست کا انعقاد

مہمان خصوصی مشہور سوشل ورکر جمال ارپن نے بھی تمام تخلیق کاروں کو مبارک باد دی اور انھیں ہر قسم کے تعاون کا یقین دلایا۔ انھوں نے کہا کہ یہ ایکک اچھے کام کی ابتداء ہوئی ہے اس لیے آپ لوگ کوشش کریں ہمارے شہر میں نہ ذہانت کی کمی ہے اور نہ محنت کشی۔ آپ نے ارادہ باندھ لیا ہے تو منزل خود آپ کے قدم چومے گی۔

مزید پڑھیں >>

اردو کی معروف افسانہ نگار سلمیٰ صدیقی کی وفات

انجمن ترقی اردو (ہند) محسوس کرتی ہے کہ سلمیٰ صدیقی کی وفات سے اردو کی ادبی دنیا کا ایسا خسارہ ہوا ہے جس کی تلافی ممکن نہیں اور دعا گو ہے کہ خدا مرحومہ کو اپنی جوارِ رحمت میں جگہ دے اور لواحقین کو صبرِجمیل کی توفیق عطا فرمائے۔

مزید پڑھیں >>

داستانِ دوحہ

میرے پاس الفاظ کم پڑ رہے ہیں کہ میں ان سب کی محبت خلوص اور مہمان نوازی کا شکریہ ادا کرسکوں۔۔۔۔لیکن ایک بات ضرور کہوں گا کہ دوحہ میں چند دن کا قیام میری زندگی کے خوبصورت اور یادگار دنوں میں ہمیشہ میرے ساتھ رہیں گے۔۔۔۔۔۔ داستان دوحہ کئی دوسری داستانوں کی طرح ان مٹ ہے!

مزید پڑھیں >>

بزم کیف کی جانب سے محفل تشکر کا انعقاد

آصف نواز نے اردو ڈائرکٹوریٹ کے ڈائرکٹر امتیاز احمد کریمی کا بھی شکریہ ادا کیا جن کی کاوشوں سے اردو ڈائرکٹوریٹ میں کیف عظیم آبادی پر ہر سال سمینار کرانے کی درخواست منظور کی گئی ۔ ٹرسٹ کے چیئرمین نے سمینار اور مشاعرہ میں مالی معاونت کے لیے قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان اور بہار اردو اکادمی کا بھی شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے ان اخبارات کے مدیران کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے کیف پر خصوصی گوشے شائع کیے۔

مزید پڑھیں >>

اردو وفاداری اور صحافتی دیانتداری کا ثبوت

کہانیوں میں سنا تھا کہ صحافت پاکیزہ اور غیر جانب دار ہوتی ہے۔ حقیقت کی دنیا میں آنکھیں کھولی تو صحافت کو سیاست دانوں اور سرمایا داروں کی کٹھ پتلی پایا ۔کیا اردو اخبارات و میڈیا کو بھی مخصوص شر پسندوں نے ہائی جیک کر لیا ہے ؟

مزید پڑھیں >>